حقوق ازواج اور ان کا اجر

معارف اسلامیہ

2020-03-02

180 مشاہدہ

حضرت رسول اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ نے عورت کے ساتھ سختی سے پیش آنے سے منع فرمایا ہے اور خولہ بنی اسود کے ایک جواب میں جس میں آنحضرت صلی اللہ علیہ والہ سے سوال کیا گیا کہ عورت کے حقوق کیا ہیں ؟ فرمایا جو خود کھائے تمہیں بھی کھلائے اور تمہیں لباس فراہم کرے اور نہ تمہارے اوپر چلائے ۔

جبکہ دوسری روایت میں فرمایا : میری امت کے اچھے مرد وہ ہیں جو اپنے اہل کی توہین نہیں کرتے ، ان سے انس رکھتے ہیں اور ان پر ظلم نہیں کرتے ۔

اسی طرح گھریلو مشاکل کے حلول کا سب سے بڑا طریقہ صبر و استقامت ہے کیونکہ بے احترامی و سزاواری سے جھگڑا مزید طول پکڑتا ہے اور حضرت امام محمد باقر علیہ السلام سے روایت ہے کہ جس نے اپنی اہلیہ سے ایک لفظ کو برداشت کیا اللہ تعالیٰ اس سے جہنم کی آگ کو دور کرے گا اور جنت واجب کرے گا۔

اور اسی طرح زوجہ کی بے اخلاقی پر صبر کے بارے میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ نے فرمایا جس نے اپنی زوجہ کی اذیت پر صبر کیا اسے اللہ تعالیٰ حضرت ایوب علیہ السلام کے صبر کے برابراجر عطاء فرمائے گا ۔

نئے مواضیع

اکثر شائع

استبيان حول طبيعة العلاقة بين التفكير الاستراتيجي وجودة الخدمة في العتبة الحسينية المقدسة

شایدآپ کو بھی پسند آئے